حقیقی بہنوں اور علاتی (باپ شریک) بہن، بھائیوں میں وراثت کی تقسیم کا بیان

سوال

السلام علیکم
میرے بھائی کا حال ہی میں انتقال ہوا ہے وہ غیر شادی شدہ تھا۔ والد اور والدہ کا انتقال بہت پہلے ہوا تھا۔  دو حقیقی بہنیں  ہیں اور والد کی طرف سے 5 بھائی اور تین بہنیں ہیں۔ سورہ نساء آیت 176 کی روشنی میں رہنمائی فرمائیں 
جزاک اللہ

جواب

الجواب حامداً و مصلیا و مسلما:
صورتِ مسئولہ میں  مرحوم  کے حقوق متقدمہ (تجہیز و تکفین کا خرچہ، مرحوم پر کوئی  قرض ہو تو اس کی ادائگی اور  اگر مرحوم نے کوئی جائز وصیت کی ہے تو بقیہ ترکہ کے ایک تہائی میں اسے نافذ کرنے کے بعد) باقی منقولہ وغیر منقولہ ترکہ میں سے میت کی دو حقیقی بہنوں میں سے ہر ایک کو %33.33، اور پانچ علاتی(باپ شریک) بھائیوں میں سے ہر ایک کو %5.13 اور تین علاتی(باپ شریک) بہنوں میں سے ہر ایک کو %2.56 ملے گا۔

 

مقام
Irving
تاریخ اور وقت
جنوری 21, 2024 @ 01:17شام
ٹیگز
کوئی ٹیگ نہیں